Wednesday, February 08, 2023
11:15 AM (GMT +5)

Go Back   CSS Forums > Off Topic Section > Poetry & Literature

Poetry & Literature Post QUOTATIONS and POETRY here that can be used while preparing notes.

Reply Share Thread: Submit Thread to Facebook Facebook     Submit Thread to Twitter Twitter     Submit Thread to Google+ Google+    
 
LinkBack Thread Tools Search this Thread
  #1  
Old Friday, August 14, 2015
SADIA SHAFIQ's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Oct 2010
Location: Heaven
Posts: 1,560
Thanks: 1,509
Thanked 1,417 Times in 749 Posts
SADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant future
Default لفظ میرے صدیوں تک گونجیں گے



میری اک تازہ غزل

لمحہ لمحہ ملا ہے درد صدیوں کا
ایک پل میں سہا ہے درد صدیوں کا

ساز کی لے پہ سر دھنتی رہی دنیا
تار نے جو سہا ہے درد صدیوں کا


چھیڑ ! اب پھر سے ،اے مطرب! وہی دھن تُو۔۔۔!
اب کہ نغمہ بنا ہے درد صدیوں کا


گیت میرے سنیں گے لوگ صدیوں تک
شاعری نے جیا ہے درد صدیوں کا


ہوش کر ساز کا قوال تو اپنے۔۔!
ہر کسی کو دیا ہے درد صدیوں کا۔۔۔!


میرا نغمہ ، مرا سُر ، ساز بھی اپنا
آئنہ سا بنا ہے درد صدیوں کا

میری ہی دُھن پہ محوِ رقص ہے کوئی ۔۔؟
ساز کس کا بنا ہے درد صدیوں کا ؟
__________________
"Wa tu izzu man-ta shaa, wa tu zillu man-ta shaa"
Reply With Quote
The Following 6 Users Say Thank You to SADIA SHAFIQ For This Useful Post:
bazmejanaan (Thursday, October 15, 2020), Cogito Ergo Sum (Saturday, September 12, 2015), Daisy (Saturday, September 12, 2015), Farhad Aslam (Saturday, September 12, 2015), fatima 789 (Monday, January 16, 2017), Innocent Heart (Wednesday, May 18, 2016)
  #2  
Old Saturday, September 12, 2015
Cogito Ergo Sum's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Feb 2015
Location: Still Running
Posts: 168
Thanks: 159
Thanked 372 Times in 143 Posts
Cogito Ergo Sum will become famous soon enoughCogito Ergo Sum will become famous soon enough
Default

Bohat khoob!

I never knew this forum could have such wonderful poets among its usual members! Accept genuine and deserved appreciation from a fellow poet. Keep writing.
__________________
"Everything the light touches, is our kingdom."
Reply With Quote
The Following User Says Thank You to Cogito Ergo Sum For This Useful Post:
SADIA SHAFIQ (Saturday, October 10, 2015)
  #3  
Old Saturday, October 10, 2015
SADIA SHAFIQ's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Oct 2010
Location: Heaven
Posts: 1,560
Thanks: 1,509
Thanked 1,417 Times in 749 Posts
SADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant future
Default


وصلِ موجِ سوز نے جو دیوانہ کیا
اب ٹھکانہ میرا بھی ویرانہ کیا

قطرہ قطرہ زہر کا قلزم بن گیا
درد نے کچھ اس طرح یارانہ کیا۔

نور ؔ نے شیشہ محل کرچی کر دیا
الجھنوں نے بےطرح دیوانہ کیا

رتبہ محشر میں شہادت کا پاؤں گی
اب اجل نے دار پر مستانہ کیا
:
مے کدے میں جلوہِ حق کو دیکھ کر
سات پھیروں نے مجھے پروانہ کیا

شرم ساری ختم کیسے ہو عصیاں کی
رب! گلہ تجھ سے جو گستاخانہ کیا

صبح نو کی اک جھلک دکھلا دیجئے
ان غموں نے حال سے بیگانہ کیا



__________________
"Wa tu izzu man-ta shaa, wa tu zillu man-ta shaa"
Reply With Quote
The Following 3 Users Say Thank You to SADIA SHAFIQ For This Useful Post:
Cogito Ergo Sum (Sunday, October 11, 2015), fatima 789 (Monday, January 16, 2017), Innocent Heart (Wednesday, May 18, 2016)
  #4  
Old Saturday, October 10, 2015
SADIA SHAFIQ's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Oct 2010
Location: Heaven
Posts: 1,560
Thanks: 1,509
Thanked 1,417 Times in 749 Posts
SADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant future
Default



جمال والا ،وصالِ صورت نظر میں آئے
مراد ہو پوری حسن سیرت نظر تو آئے


فگار دل ہوں، جلائے شعلہ مجھے سدا یہ!
جلن بڑھے ! نورِ حق بصیرت نظر تو آئے



لگاؤں حق کا میں دار پر چڑھ کے ایک نعرہ
مجھے زمانے کی اب حقارت نظر تو آئے


کہ نعش میری بہائی جائے جلا کے جب تک
دھواں مرا سب کو حق کی صورت نظر تو آئے​



کٹے مرا تن کہ خوں ' پڑھے میراکلمہ'' لا ''کا
کہ خواب میں بھی یہی عبارت نظر تو آئے



میں جو کہوں وہ عمل مری ذات کا بنے گر!
حسیں خَلق کی بھی مجھ میں طینت نظر تو آئے


__________________
"Wa tu izzu man-ta shaa, wa tu zillu man-ta shaa"
Reply With Quote
The Following 3 Users Say Thank You to SADIA SHAFIQ For This Useful Post:
Cogito Ergo Sum (Sunday, October 11, 2015), fatima 789 (Monday, January 16, 2017), Innocent Heart (Wednesday, May 18, 2016)
  #5  
Old Wednesday, September 14, 2016
SADIA SHAFIQ's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Oct 2010
Location: Heaven
Posts: 1,560
Thanks: 1,509
Thanked 1,417 Times in 749 Posts
SADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant future
Default




جفا کا نام مت لے ، یاں وفا سے کام چلتے ہیں
وہی دنیا میں باقی رہتے جو مر کے بھی جیتے ہیں

ملی معراج ھو سے ، عکسِ ھو میں ذات ہےموجود
کمالِ رقص بسمل میں ہی ہم اپنا اوج پاتے ہیں

رموزِ عشق ہجرت کی بدولت کھولتے ہیں ہم
ہمی قالو بلی کے رقص میں اکثر جو رہتے ہیں

نمودِ ہست کی فطرت کے جلتے دیے رہنے
قلندر پر ازل کے پردے سارے فاش ہوتے ہیں

ازل کے نور نے مجذوبیت بخشی ، ہوں مثلِ بحر
تلاطم خیزی سے طوفان میری گھبرا جاتے ہیں​

__________________
"Wa tu izzu man-ta shaa, wa tu zillu man-ta shaa"
Reply With Quote
The Following User Says Thank You to SADIA SHAFIQ For This Useful Post:
fatima 789 (Monday, January 16, 2017)
  #6  
Old Wednesday, September 14, 2016
SADIA SHAFIQ's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Oct 2010
Location: Heaven
Posts: 1,560
Thanks: 1,509
Thanked 1,417 Times in 749 Posts
SADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant future
Default

ازل نے کی ابد کی جستجو مقامِ ھو تلک
جنوں کو مل ہے جائے آبرو مقامِ ھو تلک

فلک کا نور جب وجود میں سما رہا تھا تب
خودی میں آئنہ تھا روبرو مقام ھو تلک​

نبی کی میم کی کہانی الف کی مثال ہے
خلق جو آئنہ ہوا ہےھو مقام ھو تلک

حسن ، حسین یہ علی کے ہیں چمن کے لالہ زار
انہی سے ہستی کی ہوئی نمو مقامِ ھو تلک​

دریچے دل کے وا ہوئے ہےبکھرا سحر چار سو
درود سے ملا ہے رنگ و بو مقامِ ھو تلک

جو عفو کی مثال ہیں وہ فاطمہ کمال ہیں
ملا ہے ان سے اوج نورؔ کو مقامِ ھو تلک

مجھے ہے زعمِ شعر گوئی وہ کہ مسکرائے جائے
قلم ہے چلتا جب رسائی ہو مقامِ ھو تلک
__________________
"Wa tu izzu man-ta shaa, wa tu zillu man-ta shaa"
Reply With Quote
  #7  
Old Wednesday, September 14, 2016
SADIA SHAFIQ's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Oct 2010
Location: Heaven
Posts: 1,560
Thanks: 1,509
Thanked 1,417 Times in 749 Posts
SADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant future
Default



خبر نہیں تھی جانے کیسے لہروں میں گھرے
بھنور کی کیا مجال یہ ہمیں ڈبو چلے

کہاں کہاں تلک مجھے اڑان مل سکے
ترے یہ صید جال بچھنے چار سو لگے!

یہ کیسا دھوکہ زندگی ہے! کون جانے ہے !
دکھاوا یہ خوشی کا جانے کب تلک چلے !

کمان سے جو تیر نکلا ، سینے میں کھبا
تری نگہ سے کتنے دل فگار ہو چلے

قصور روشنی کا تو ہے، جو اندھیروں میں
اجالے کی تلاش میں ادھر ادھر پھرے

پہاڑوں پہ چڑھنے کی لگن نے مات دی
مگر لو عشق کی بھی دھیمی دھیمی ہے جلے

ہمارے حصے دشت کی لکھی سیاہی ہے
اسی لیے بھی تارکِ رہ ہونے ہیں لگے

سیاہ رات میں ہی آگہی کے چاند سے
بجھے چراغ ذات کے ستارے تھے بنے
__________________
"Wa tu izzu man-ta shaa, wa tu zillu man-ta shaa"
Reply With Quote
  #8  
Old Monday, October 24, 2016
Junior Member
 
Join Date: Apr 2016
Posts: 1
Thanks: 3
Thanked 0 Times in 0 Posts
ahsandanishktk is on a distinguished road
Default

Quote:
Originally Posted by SADIA SHAFIQ View Post


جمال والا ،وصالِ صورت نظر میں آئے
مراد ہو پوری حسن سیرت نظر تو آئے


فگار دل ہوں، جلائے شعلہ مجھے سدا یہ!
جلن بڑھے ! نورِ حق بصیرت نظر تو آئے



لگاؤں حق کا میں دار پر چڑھ کے ایک نعرہ
مجھے زمانے کی اب حقارت نظر تو آئے


کہ نعش میری بہائی جائے جلا کے جب تک
دھواں مرا سب کو حق کی صورت نظر تو آئے​



کٹے مرا تن کہ خوں ' پڑھے میراکلمہ'' لا ''کا
کہ خواب میں بھی یہی عبارت نظر تو آئے



میں جو کہوں وہ عمل مری ذات کا بنے گر!
حسیں خَلق کی بھی مجھ میں طینت نظر تو آئے


Some lines deserved to be appreciated in poetic sense but i wld like to add that some lines are ignored to be more classic but still "wah"
Quote:
Originally Posted by SADIA SHAFIQ View Post



جفا کا نام مت لے ، یاں وفا سے کام چلتے ہیں
وہی دنیا میں باقی رہتے جو مر کے بھی جیتے ہیں

ملی معراج ھو سے ، عکسِ ھو میں ذات ہےموجود
کمالِ رقص بسمل میں ہی ہم اپنا اوج پاتے ہیں

رموزِ عشق ہجرت کی بدولت کھولتے ہیں ہم
ہمی قالو بلی کے رقص میں اکثر جو رہتے ہیں

نمودِ ہست کی فطرت کے جلتے دیے رہنے
قلندر پر ازل کے پردے سارے فاش ہوتے ہیں

ازل کے نور نے مجذوبیت بخشی ، ہوں مثلِ بحر
تلاطم خیزی سے طوفان میری گھبرا جاتے ہیں​


Sent from my QMobile A3 using Tapatalk
Reply With Quote
  #9  
Old Sunday, January 22, 2017
SADIA SHAFIQ's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Oct 2010
Location: Heaven
Posts: 1,560
Thanks: 1,509
Thanked 1,417 Times in 749 Posts
SADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant future
Default


زندگی میں سب کچھ لُٹا چکنے کے بعد امید کے پہلو میں بیٹھے محبت کے نئے رنگوں سے کھیل رہی ہوں .افق پر قزح کے رنگوں نے دُنیا کی خوبصورتی بڑھا دی ہو جیسے ۔۔۔! امنگوں کے جاگنے سے من کے سمندر نے سپیوں کو پالیا ہو جیسے ۔۔۔! کچھ ایسے گمانوں میں جھومتی روح نے اداسی کو چادر کو سلیقے سے اوڑھنے کا سلیقہ سیکھ لیا ہے . ایک نئی ہستی کی تکمیل پرانے اجزاء ترکیبی سے ہو جائے اور اسکو نئے رنگوں سے گوندھا جائے تو کالا رنگ اترتے دیر نہیں لگتی . کائنات کی ناتمامی کو کالے رنگ کی چادر سے پردہ ڈال دیا ہے اور کہیں تکمیل شدہ اجزائے ترکیبی پر کالا رنگ چڑھا دیا گیا ہے . اس رنگ کے مابین یقین اور بے یقینی کی فضا پھیلا دی گئی . جب حجاب اٹھتا ہے تو ست رنگی بہار وجود کو چار اوڑھ لپیٹ لیتی ہے جبکہ امید کو استقلال میں ڈھلنے، صبر کو عزم کی تصویر بننے ، عشق کو تعبیر بننے کے لیے خاک کو جس خمیر سے گوندھا گیا ہے وہ خمیر بھی حجاب رکھتا ہے . ایسا حجاب جس کے چار اوڑھ اندھیرا ہے اور اندھیرے پر مٹی کا لباس ... زندگی میں سب کچھ لٹا چکنے کے بعد میرے پاس ایک ہی سرمایہ بچا ہے وہ سرمایہ حیات محبت کی تقسیم ہے جس کو ہر انس کی فطرت میں رکھا گیا ہے مگر تقسیم امید کے چراغ اپنانے سے ملتی ہے ... میں ان چراغوں سے افق پر قزح کے رنگوں کو دیکھ رہی ہوں اور طمانیت کا احساس رگ وپے میں سرائیت کرگیا ہے​


انسان اپنی دُھن ، لگن کی خاطر نفع لینے سے نقصان ملتا چلا جائے تاہم ہستی اسی سمت پر جستجو کے رنگ بکھیرتی چلی جائے تو بس مقصد حیات فوت ہوجاتا ہے . ہمیں معلوم نہیں ہوسکتا ہے کہ ہستی کیوں ادھوری ہے تو کیونکر معلوم ہو کہ تکمیل کے ثمرات کیا ہیں ۔ناتمامی پہ ماتم ! اپنی تکمیل کس لیے ہو؟ تکمیل وصل سے ہوتی ہے۔وصل کی گھڑی سے پہلے اُداسی کی انتہا سے گزرنا پڑتا ہے .اسی اداسی کی مثال موسم خزاں کی سی ہے جیسے خزاں میں پتے چر چراتے ہیں اور ہُو کے عالم میں کالا رنگ اوڑھے خاکی پتلا گھومے جا رہا ہے ! اپنی ناتمامی کا ماتم ! کیسا ماتم؟ تکمیل کے دائرے سے اختلاف مقاصد کو سمت دیتا ہے اور پرواز کے بعد آزمائش ہوتی ہے . اس آزمائش کے بعد وصل مل جاتا ہے ! خاک کی موت ہوجاتی ہے اور حیات دوامی ،وجود فانی کی منزلیں عطا ہوجاتی ہیں تب زبان پر 'اسم َ حق ' لا فانی ذات کا ذکر شروع ہوجاتا ہے .آنکھ تب تک روتی ہے جب تک اس کو موت کی سند عطا نہیں ہوتی ہے .

جن جذبات کو قرطاس پہ تحریر دیکھنا چاہتی ہے ، قرطاس اس معیار پر پورا اتر نہیں رہا ہے ! قرطاس کو چاندی کے ورق میں ڈھالا جاتا ہے اور چاند کی روشنی میں رکھے جانے کے بعد ماہتاب کے سائے میں پرورش کی جاتی ہے یہاں تک کہ خورشید مثل خورشید ، چاند مثل چاند اور چاندنی چار سُو اوراق سے پھیلنے لگتی ہے . ان اجزائے ترکیبی سے کی نمود ہستی تب سہ سکتی ہے جب بھنور میں رہنا سیکھ لے اور بات اس نہج کو پہنچے کہ بھنور کی کیا مجال ہمیں ڈبو چلے !

قندیل کی روشنی نرم نرم سبز پتوں کی ودیعت ہے ! وہ پتے جن کو زیتون کے درخت سے نسبت ہے ! یہ ارواح کی قندیل اس سر سبز سدا بہار نور کے چراغ سے وصال کے بعد روشن رہتی ہے ! یہ ابد کا سفر ہے جو بعد فنا کے عطا ہوتا ہے جس پر قرطاس سے لکھوایا گیا کہ ازل نے کی ابد کی جستجو مقام ھو تلک ، جنوں کو مل ہے جائے آبرو مقام ھو تلک ............................... یہ آئنے جو دھندا لا جاتے ہیں ! یہ آئنے جو ٹوٹ جاتے ہیں ، یہ آئنے جن کی روشنی کھونے لگتی ہے مگر جستجو جاری رہتی ہے ! ایسے آئنے ازل کے نور سے سیراب کیے جاتے ہیں اور ان کو اوج فنا کے بعد بقا ، حیات دوامی کی وہ منزل مل جاتی ہے جس کے بعد نہ تو تو رہا ، نہ میں میں رہا............ کا تذکرہ کیا جاتا ہے ......... ایسا کیوں ہے ! ایسا کیوں ہے ؟منزلیں فنا ہوجاتی ہیں ،جستجو مٹتی نہیں ہے، سکندری مل بھی جائے تو گداگری کی طلب رہتی ہے ! کون جانے کے ازل نے ، ازل کے ٹکرے کو ادھورا کردیا ! وچھوڑا دے کے اس کی کمر توڑ دی ! عجز کی لاٹھی عطا کردی ، بڑھاپے نے فقر سے پناہ پکڑ لی اور مسافر کو پڑاؤ کی جگہ پر پڑاؤ کرنے سے روک دیا ! اسے کہا گیا کہ ابھی سفر کر ! اے میرے ہمنشیں ! ابھی سفر کر ! ابھی کوزہ گر سے ملنا ہے !​
__________________
"Wa tu izzu man-ta shaa, wa tu zillu man-ta shaa"
Reply With Quote
  #10  
Old Sunday, January 22, 2017
SADIA SHAFIQ's Avatar
Senior Member
 
Join Date: Oct 2010
Location: Heaven
Posts: 1,560
Thanks: 1,509
Thanked 1,417 Times in 749 Posts
SADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant futureSADIA SHAFIQ has a brilliant future
Default


فراق و وصل سے پرے یہ ایسا اک مقام ہے
نظر نہ آئے وہ ، جو رہتا مجھ میں ہم کلام ہے

نظر مکاں سے لامکاں تلک جو میری ہے گئی
عجب ہی رنگ و بو کا چار سو وہ انتظام ہے

یہ بیچ راہ کا ہے کھیل کب تلک یہ بھی چلے
تری نگہ کے تیر سہنا عشق میں جو عام ہے

بدن کی قید میں جوپارہ تھا ، وہ اب چٹک گیا
بکھرنا روشنی کا ُاس کے ملک کا نظام ہے

فلک تلک رسائی نورؔ کو ملی بھٹک بھٹک
یہ بعد موت کے لگا بڑا مجھے مقام ہے​

__________________
"Wa tu izzu man-ta shaa, wa tu zillu man-ta shaa"
Reply With Quote
Reply

Thread Tools Search this Thread
Search this Thread:

Advanced Search

Posting Rules
You may not post new threads
You may not post replies
You may not post attachments
You may not edit your posts

BB code is On
Smilies are On
[IMG] code is On
HTML code is Off
Trackbacks are On
Pingbacks are On
Refbacks are On


Similar Threads
Thread Thread Starter Forum Replies Last Post
لفظ میرے، میرے ہونے کی گواہی دیں گے Farrah Zafar Poetry & Literature 97 Thursday, October 15, 2020 03:34 PM
Manto Kay 20 Afsanay by Dr.Anwar Ahmad and Dr. A.B. Ashraf Amna Urdu Literature 22 Monday, February 29, 2016 01:08 PM
لفظ میرے گواہی SADIA SHAFIQ Urdu Poetry 12 Wednesday, April 23, 2014 06:44 PM
Tallafuzz Farrah Zafar Urdu Literature 0 Tuesday, June 12, 2012 04:55 PM
چراغِ زندگی ہو گا فروزاں ہم نہیں ہوں گے Arain007 Urdu Poetry 0 Tuesday, August 16, 2011 11:54 AM


CSS Forum on Facebook Follow CSS Forum on Twitter

Disclaimer: All messages made available as part of this discussion group (including any bulletin boards and chat rooms) and any opinions, advice, statements or other information contained in any messages posted or transmitted by any third party are the responsibility of the author of that message and not of CSSForum.com.pk (unless CSSForum.com.pk is specifically identified as the author of the message). The fact that a particular message is posted on or transmitted using this web site does not mean that CSSForum has endorsed that message in any way or verified the accuracy, completeness or usefulness of any message. We encourage visitors to the forum to report any objectionable message in site feedback. This forum is not monitored 24/7.

Sponsors: ArgusVision   vBulletin, Copyright ©2000 - 2023, Jelsoft Enterprises Ltd.